آصف زرداری کی طبی بنیادوں پر ضمانت منظور، رہائی کا حکم

0
768
اسلام آباد ہائیکورٹ نے آصف زرداری کی ایک ایک کروڑ روپے کے مچلکے کے عوض ضمانت منظور کرل

اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق صدرآصف علی زرداری کی طبی بنیادوں پر ضمانت منظور کرتے ہوئے انہیں رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ اور جسٹس عامرفاروق پر مشتمل اسلام آباد ہائی کورٹ کے دورکنی خصوصی بنچ نے میگا منی لانڈرنگ اور پارک لین کیسز میں آصف زرداری اور فریال تالپور کی درخواست ضمانت کی سماعت کی

نیب پراسیکیوٹر جہانزیب بھروانہ اور آصف زرداری کے وکیل فاروق ایچ نائیک پیش ہوئے۔ عدالت کے حکم پر نیب پراسیکوٹر جہانزیب بھروانہ نے آصف زرداری کی میڈیکل رپورٹ پڑھ کر سنائی۔

میڈیکل بورڈ کی رپورٹ میں کہا گیا کہ آصف علی زرداری دل کے عارضے سمیت مختلف قسم کی بیماریوں میں مبتلا ہیں، انہیں شوگر کی بیماری بھی لاحق ہے۔

عدالت نے دونوں مقدمات میگا منی لانڈرنگ اور پارک لین کیسز میں آصف زرداری کی طبی بنیادوں پر درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے ایک ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔

فریال تالپور کی درخواست

فریال تالپور کی ضمانت کی درخواست پر نیب نے جواب جمع نہ کرایا جس پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے نیب کو جواب جمع کرانے کیلئےوقت دیتے ہوئے فریال تالپور کی درخواست پرسماعت 17 دسمبر تک ملتوی کردی۔

واضح رہے کہ آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور نے طبی بنیادوں پردرخواست ضمانت دائر کی ہے۔ آصف علی زرداری کا موقف ہے کہ انہیں دل کی بیماری اور شوگر ہے جس کے مستقل علاج کے لیے رہائی کی ضرورت ہے۔

فریال تالپور نے درخواست میں کہا ہے کہ اسپیشل بچی کی والدہ ہوں جس کی دیکھ بھال کے لیے ٹرائل مکمل ہونے تک ضمانت منظور کی جائے

LEAVE A REPLY