ایسا کیا ہوا جو مصطفیٰ کمال نے سیاست چھوڑنے کا اعلان کر دیا؟َ

0
530

مسائل حل ہوں گے تو سیاست چھوڑ کر پارٹی بند کردوں گا، مصطفیٰ کمال

کراچی صدر پی ایس پی مصطفیٰ کمال نے انہیں پی ڈی گاربیج کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب مسائل حل ہوں گے تو سیاست چھوڑ کر پارٹی بند کردوں گا۔ انہوں نے کہا کہ میں دشمن نہیں ہوں، مسئلہ کرداراورکرپشن کا ہے اسی لیے کراچی کا کچرا نہیں اٹھایا جارہا۔

پریس کانفرنس میں انہوں وزیراعظم، وزیراعلیٰ سندھ اور گورنرسندھ سے نوٹس لینے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔ مصطفیٰ کمال نے کہا کہ موجودہ وسائل میں90 دن میں صفائی کا چیلنج قبول کیا تو مئیر کراچی ڈرگئے، میئر نے رات نوٹیفکیشن جاری کیا اور صبح واپس لے لیا، واضح ہوگیا مسئلہ وسائل کا نہیں کرپشن کا ہے۔ فنانس ایڈوائزر سے پوچھنا تھا کہ خاکروبوں کے اربوں روپے کہاں جا رہے ہیں؟ میئر نے رات نوٹیفکیشن جاری کیا اور صبح واپس لے لیا، واضح ہوگیا مسئلہ وسائل کا نہیں کرپشن کا ہے، میئرکراچی شرم کریں اور استعفیٰ دیں۔

مصطفیٰ کمال نے گفتگو میں بتایا کہ آفس کے ٹھنڈے کمروں میں پیسے کی تقسیم ہوتی ہے، پیسے کی تقسیم سڑکوں پر تونہیں ہوسکتی۔ کچرا کراچی کی سڑکو ں پر پڑا ہوا ہے، پھر میں آفس میں کیوں آؤ؟ میں نے رات 2 بجے لوگوں کو جس جگہ بلایا ، اب وہاں کچرا نہیں ہے۔ مصطفی کمال نے کہاکہ اگر سیاست کرتا تو پراجیکٹ ڈائریکٹر گاربیج کا عہدہ نہ لیتا، اور مخالف کو باس نہ کہتا۔

مصطفی کمال نے میئرکراچی وسیم اخترکو باس قراردیا ،میئر کراچی اور ڈسٹرکٹ چیئرمینوں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا مطالبہ بھی کردیا ہے۔ ڈسٹرکٹ چیئرمین نے گلشن اقبال میں 16کروڑ روپے کا گھرخریدا، یہ پیسے کہاں سے آئے؟کونسا کاروبار ہے۔مصطفی کمال نے مطالبہ کیا کہ عمران خان صرف اسلام آباد اور بنی گالہ کے وزیراعظم نہیں، عمران خان کراچی کے بھی وزیراعظم ہیں، پھر کراچی کیوں نہیں آتے؟انہوں نے کہا کہ وزیراعظم صاحب!آپ کو کراچی میں کرپشن کیوں نظر نہیں آتی،پوراپاکستان معاشی طور تباہ ہو رہا ہے، آپ کب ایکشن لیں گے؟ واضح رہے چئیرمین پاک سرزمین پارٹیکے پاس میئر جتنے اختیارات ہوں گے، شہر کے 4 اضلاع کو 3 ماہ کے اندر صاف کرنے کے ذمے دار ہوں گے۔

LEAVE A REPLY